GT Bible Studies    

    Urdu    


Navigation Glad Tidings Bible Studies in Urdu

یسوع مسیح ایک نااْمید بیمار شخص سے ملاقات کرتا ہے مرقس 2 باب1 سے12

پس پردہ معلومات : یسوع کے زمانے میں گھروں کی چھتیں چونے اور ٹائیلوں سے بنی ہوئی ہوتی تھیں۔ گھر کے باہر سے سیڑھیاں گھر کی چھت تک جاتی تھیں ۔ جب کو ئی شخص درمیانی عمر یا عمر رسیدہ ہو جاتا تو وہ عموماً دماغ کی نس پھٹنے سے مفلوج ہو جاتا تھا۔ ایک مفلوج شخص نہ تو حرکت کر سکتا ہے اور نہ ہی بول سکتا ہے۔ ابن آدم کا نام یسوع نے اپنے لئے استعمال کیا تھا۔
1۔ کیا آپ کے خیال میں ایک بستر پر پڑا شخص جو نہ بول سکتا ہو اور نہ حرکت کرسکتا ہو خوش ہو سکتا ہے؟
*اِس آدمی کو اپنی روزمرہ کی زندگی میں کس طرح کی نگہداشت کی ضرورت تھی؟
*تصور کیجئے اْس آدمی کی زندگی کی بابت جو ہر روز اِس کی دیکھ بھال کیا کرتا تھا۔
2 ۔ تمام یہودی اْس وقت خدا پر ایمان رکھتے تھے یہ شخص غالباً خدا اور ایمان کے بارے میں مفلوج ہونے کے بعد کیا سوچتا تھا؟
3 ۔ 5 آیت سے ہم معلوم کر سکتے ہیں کہ اِس شخص کے ضمیر پر گناہ تھے ۔ ایک ایسا آدمی جو نہ حرکت کر سکتا ہو نہ بول سکتا ہو کس طرح کے گناہوں کا مرتکب ہو سکتا ہے ؟
*آپ کیا رائے رکھتے ہیں ۔ کیا دِکھ اور بیماری بحیثیت انسان ہم کو بہتر یا بدتر کے طور پر بدلتی ہے؟
4 ۔ کمبل میں لپٹے ایک مفلوج آدمی کو دیہات میں سفر کروانا کس قدر مشکل تھا؟
* کیوں دوسرے لوگ گھر سے باہر نہ آئے اور اِس غریب آدمی کو یسوع کے پاس اٹھا کر جانے کی اجازت نہ دی(4)؟
*کیوں چار دوست بھیڑ سے واپس نہ مڑے اور اپنے گھروں کو واپس نہ لوٹ گئے جبکہ انہیں معلوم ہوگیا تھا کہ درواز ے سے اندر داخل ہونا ناممکن ہے ؟
5۔اِن چار آدمیوں کا اِس مفلوج آدمی سے کیا تعلق تھا؟
*کون سے احتیاطی تدابیر ضروری تھیں جب مفلوج شخص کو چھت سے اْتارا گیا تھا؟ )اِس گھر کے بارے میں پس پردہ معلومات دیکھیں(
*چھت کو توڑنے کے لئے کن آلات کی ضرورت تھی ؟ اِن آلات کو وہ کہاں سے لائے تھے؟
*غالباً کس قسم کے الفاظ اِن کو نیچے کمرے میں سے سننے کو ملے جب انہوں نے چھت کو توڑا ہوگا؟
6 ۔چار آدمی اپنے دوست کو یسوع کے پاس لائے تاکہ وہ شفا پائے ۔ کیوں یسوع نے اْس شخص کے پہلے گناہ معاف فرمائے(5)؟
*کیوں یسوع نے اِس ترتیب سے کام کیا : پہلے گناہوں کو معاف کرنا پھر بیماری سے شفا دینا۔
*مفلوج آدمی کے لئے اِس بات کا کیا مطلب تھا کہ اْس کے ماضی کے تمام غلط کام معاف کر دئیے؟
7 ۔ ایک ایسی صورتِ حال کا تصور کریں کہ جب آپ یسوع کے پاس جاتے ہیں اور اْس کو اپنے سب سے بڑے مسئلے کو حل کرنے کا کہتے ہیں ۔ تو پھر اگر وہ یوْں جواب دے: میرے بیٹے /میری بیٹی تمہارے گناہ معاف ہوئے تو کیا آپ اِس بات پر اْداس ہونگے یاخوش ہونگے؟
*کیسے اْس مفلوج آدمی کا رویہ اپنی بیماری کی بابت تبدیل ہوا جب اْس کو معلوم ہواکہ وہ آخر میں آسمان کی بادشاہی میں جائے گا۔
8 ۔ آیت 5 میں یسوع اْس مفلوج کے ایمان کی بابت نہیں بلکہ اْس کے دوستوں کے ایمان کی بابت بات کر رہا ہے ۔بے شک یسوع سے ملاقات سے پہلے اْس شخص کا کوئی ایمان نہ تھا۔ اْس آیت کا ذکر کریں جب آپ کے خیال میں اْس نے یسوع پر ایمان لانا شروع کیا؟
*کیوں شرع کے عالموں نے یقین نہ کیا کہ یسوع لوگوں کو اْن کے گناہ معاف کرنے کے قابل ہے ۔(7-8)؟
9 ۔ آیت میں یسوع جو سوال پوچھتا ہے اْس کا جواب دیں ۔
*یسوع نے اِس آدمی کو شفا دینے کے لئے کیا قیمت دی ؟ اْس شخص کو اْ س کے گناہوں کی معافی کی کیا قیمت چکا نا پڑی؟
*آپ یسوع کی بابت کیا سوچتے ہیں اگر آپ اْس واقعہ کے جو 10 سے 12 آیت میں بیان کیاگیا ہے کہ چشم دید گواہ ہوتے ؟
10 ۔بشارتی سولات : اگر آپ کا دل آپ کو اپنے کئے گئے کسی غلط کام کی بابت ملامت کررہا ہے تو پھر آپ کو جو یسوع کہہ رہا ہے اْسے سنیں: میرے بیٹے /میری بیٹی تمہارے گناہ معاف ہوئے " اپنے وعدہ کے عین مطابق ادا کرنے کے لئے یسو ع کو صلیب پر مرنا تھا۔آج اْس کا وعدہ آپ کے لئے کیا مطلب رکھتا ہے؟) آپ اپنے دل میں اِس کا جواب دے سکتے ہیں( *) ہر کوئی جواب دے سکتا ہے( : کونسی سب سے اہم بات آپ نے اِس بائبل مطالعہ سے سیکھی؟

Version for printing    
Downloads    
Contact us    
Webmaster