GT Bible Studies    

    Urdu    


Navigation Glad Tidings Bible Studies in Urdu
یسوع کی مزید تعلیمات:ایک اور مسرف بیٹا لوقا15باب 15سے 32آیت
پس منظر معلومات: حقیقت کے طور پرباپ نے اپنی نصف جائیداد اپنے بڑے بیٹے کو دے دی۔ جب چھوٹے بیٹے نے اپنی وراثت حاصل کر لی۔ (آیت 12) یہ باپ کا قصور نہ تھا کہ اس کی باتوں کا اس کے بیٹے نے یقین نہ کیا۔
1۔ کیا ایک نوجوان خوش رہ سکتا ہے، اگر اس کو محسوس ہو جائے کہ اس کے والدین اسے پیار نہیں کرتے؟
* بڑے بیٹے نے اپنے باپ کو کیوں نہ چھوڑا اور اپنے بھائی کے ساتھ دور دراز کیوں نہ گیا،اگر وہ اپنے گھر میں ناخوش تھا؟
* آپ کیا سوچتے ہیں کہ بڑا بیٹا کچھ اور لینے کی بھی خواہش رکھتا تھا۔ جو کہ پاس بھی تھا؟
2۔ بڑے بیٹے نے اپنے آپ کو غلام کیوں تصور کیا۔ حالانکہ اس کے باپ نے اسے آدھی جائیداد دینے کا وعدہ بھی کیا ہواتھا؟(12b,29,31)
*اگر تم اس تمثیل میں باپ کو خدا سمجھتے ہو۔ اور چھوٹے بھائی کو ایسا شخص سمجھتے ہو جو مسیحی ایمان سے دور بھاگتا ہے۔ تو پھر بڑے بھائی کو کس سے تشبع دیں گے؟
* آپ کے خیال میں باپ نے اپنے بیٹوں کے ساتھ صحیح سلوک کیا؟
* بڑا بیٹا کیا سوچ سکتا ہے جب وہ اپنے کھیتوں میں روز بروز مشقت میں مصروف رہتا ہے؟
* اگر تم نے بڑے بیٹے کی طرح محسوس کرنا شروع کر دیا ہے، تو یہ کس صورت حال میں ہوا؟
* وہ کونسی وجہ تھی، کہ بڑے بیٹے نے کبھی اپنے دوستوں کو دعوت میں نہیں بلایا؟
*باپ کیسے اس چیز کو محسوس کرتا ہے۔ اگر اس کا بیٹا دوستوں کی دعوت کے لئے بکرا،بھیڑ، اور بچھڑا ذبح کرتا ہے؟(30-31)
4۔ وہ کونسی اصل وجہ تھی جس کی وجہ سے بڑے بیٹے نے اس صورت حال اپنی خصلت نہیں چھوڑی؟(27-28)
*چھوٹے بیٹے نے سارے گاؤں کے سامنے اپنے باپ کو ذلیل و خوار کیا۔ اور اب بڑے بیٹے نے وہی کام کیا۔ یہ باپ کیوں ناراض نہیں ہوتا؟
*28باب کی 31اور 32آیت کے مطابق خدا کے بارے میں کیا تاثر ہے؟
5 ۔ بڑے بیٹے نے اپنے باپ کو کیوں پیار نہیں دکھایا، جبکہ اس کا باپ اپنے بیٹے کے لئے اچھی سوچ رکھتا تھا؟
*اس تمثیل کو سامنے رکھتے ہوئے بحث کرو۔ کہ اگر ہم خدا سے محبت نہیں کرتے تو اس کی کیا وجہ ہے؟
6۔ بڑے بیٹے کا خیال تھا۔ کہ اس نے ہمیشہ اپنے باپ کی مرضی پوری کی۔ اور ابھی تک باپ نے اس سے زیادہ سے زیادہ توقع لگائی ہوئی ہے۔
* بڑے بھائی نے چھوٹے بھائی کو کبھی بھی دل سے قبول نہیں کیا۔ یہ رویہ کیا ثابت کرتا ہے؟(30)
* کون بڑے بیٹے سے پیار کرتا تھا؟
7۔کیوں یسوع نے اس کہانی کے درمیان میں بڑے بھائی کی دعوت میں شمولیت کا ذکر نہیں کیا۔(28)
8۔ یسوع کی تمثیل میں ضافت سے مراد جنت لی جاتی ہے۔اس تمثیل کے مطابق کس کا قصور ہے کہ وہ جنت کا راستہ اخیتار نہیں کرتا؟
9۔ایسی صورتحال کا تصور کرو۔جب اگلی صبح دونوں بھائی کھتیوں میں کا م کے لیے جاتے ہیں تو بڑے بھائی کا مزاج کیسا تھا اور چھوٹے بھائی کا مزاج کیسا تھا


*دُنیا میں اِس تمثیل کی طرح تمام لوگوں کا اِن بیٹوں کی طرح رویہ ملتا جلتا ہوتا ہے( تم اپنے دل میں جواب دے سکتے ہو)
10 بشارتی سولات ؛یسوع آپ سے کہتا ہے جو کچھ میرا ہے وہ تمہارا ہے!صیلبی موت قبول کر کے آپ کے لیے جنت میں جگہ بنائی ۔اُس نے اپنی وراثت آپ کو اس دن منتقل کر دی ،جس دن آپ نے بپتسمہ پایا۔ بڑے بیٹے نے اس دعدے پر یقین نہ کیا ۔ بلکہ غلام کی طرح وراثت کے لئے مشقت کرتا رہا۔ کیا آپ یقین کرتے ہیں؟ کہ آپ کو آسمانی وراثت مفت میں ملے گی، یا تم ایسے اچھے کاموں کے وسیلے کمانے کی کوشش کرتے ہو؟(تم اپنے دل میں جواب دے سکتے ہو)
(ہر ایک کے لئے سوال) کونسی ایسی خاص بات جو آپ نے اس دفعہ اس حوالے میں سیکھی ہے؟

Version for printing    
Downloads    
Contact us    
Webmaster